رسالے

البعث الاسلامی
عرب دنیا کو فکر اسلامی کا پیغام پہنچانے کے لیے اس عربی رسالہ کو 1955 میں مولانا سید محمد الحسنی ندوی مرحوم نے اپنے چند رفقاء کے ساتھ جاری کیا تھا، اور انتقال کے وقت تک وہ اپنے رفیق کار مولانا ڈاکٹر سعیدالرحمن اعظمی ندوی کے ساتھ ادارت کے فرائض انجام دیتے رہے، اب مولانا ڈاکٹر سعیدالرحمن اعظمی ندوی مہتمم دارالعلوم ندوۃالعلماء اس کے رئیس التحریر ہیں، اور اس میں ان کے رفیق ادارت مولانا محمد واضح رشید حسنی ندوی معتمد تعلیم ندوۃالعلماء ہیں، اس میں ہندوعرب کے اہل قلم علماء وفضلاء کے مضامین شائع ہوتے ہیں، الحمد للہ یہ پرچہ ہندوپاک کے علاوہ ممالک عربیہ میں کافی شہرت رکھتا ہے، اور اس کا شمار صف اول کے دینی پرچوں میں کیا جاتا ہے، عراق، حجاز، کویت، لبنان وغیرہ کے دینی ماہنامے اس کے مضامین نقل کرتے ہیں، اﷲ کا شکر ہے کہ ان ممالک میں ’’البعث الاسلامی‘‘ کا ایک وقیع حلقہ پیدا ہوگیا ہے، سال رواں میں ’’البعث الاسلامی‘‘ ۳۷۰۰؍کی تعداد میں شائع ہورہا ہے، دوہزار اس کے خریدار ہیں، بقیہ پرچے اعزازی اور تبادلہ میں جاتے ہیں۔

الرائد
ہندوپاک سے نکلنے والا سب سے پہلا عربی پندرہ روزہ اخبار ہے، جو طلبہ کی انجمن ’’النادی العربی‘‘ کے تحت تقریباً ۴۴؍سال سے حضرت مولاناسید محمد رابع صاحب حسنی ندوی ناظم ندوۃالعلماء کے زیرنگرانی نکل رہا ہے، جس کی ادارت کی ذمہ داری مولانا سید محمد واضح رشید حسنی ندوی صاحب معتمد تعلیم ندوۃالعلماء انجام دے رہے ہیں۔
یہ طلبہ اور نوجوان اہل قلم کو تازہ عربی صحافت میں حصہ لینے کا موقع فراہم کرنے کے لیے جاری کیا گیا تھا، اور اپنی تاریخ اجرا سے تاحال ایک کامیاب جریدہ کی حیثیت سے کام کر رہا ہے، عالم اسلام کی دینی و علمی تحریکات و افکار پر ٹھوس اور سنجیدہ اسلوب میں تبصرہ کرتا ہے، اور مسلمانوں کے ملی حالات کا جائزہ بھی پیش کرتا رہتا ہے، اس کی ترتیب وتحریر میں ذی استعداد طلبہ بھی شرکت کرتے ہیں، اور یہ عرب ممالک میں بھی قدر کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے، اور طلبہ وعلماء نیز ممالک عربیہ کے بہت سے اہل ذوق حضرات کی نظر سے گزرتا ہے اور پسند کیا جاتا ہے، قارئین میں ایک خاصی تعداد خریداروں کی ہے، آٹھ صفحات پر مشتمل یہ پرچہ ہرماہ کی ابتدا اور وسط میں نکلتا ہے۔

تعمیر حیات
تعمیرِ حیات ندوۃ العلماء لکھنؤ کا ترجمان ہے، اور طویل عرصہ سے ندوۃ العلماء کے افکار، خیالات، نظریات اور عقائد کی ترجمانی کررہا ہے، جس کے ضمن میں اس نے ملی و دینی مسائل میں ملکی و غیر ملکی ہر دو سطح پر امتِ مسلمہ کی بھر پور رہنمائی کی ہے، اور چوٹی کےاہلِ قلم اور سخنوروں نے اپنی نوکِ قلم سے اس کے صفحات پراپنی فکر رسا اور سخن دانی کے نقوش چھوڑے ہیں۔
یہ دینی، فکری، دعوتی، اصلاحی مجلہ ندوۃ العلماء کے ناظم کی سرپرستی اور ناظرعام ندوۃ العلماء کی نگرانی میں نکلتا ہے۔اس کا امتیازی وصف ہے کہ یہ بیک وقت امتِ مسلمہ کے تمام طبقات کو مخاطب کرتا ہے، جس کے لئے علمی ، فکری اور ادبی مواد کے ساتھ اسلوب میں سہولت، آسانی اور عام فہمی کی ضرورت ہوتی ہے۔ تعمیرِ حیات نے ہمیشہ اسی اسلوب کو پیش کرنے کی کوشش کی ہے اور امتِ مسلمہ کے ہر طبقہ میں مقبولیت اور اپنا خاص مقام حاصل کیا ہے۔