میت کو قبرستان کیسے لے جائیں ؟

تکفین کے بعد کلمہ کی تلقین اورقبرپرہری ٹہنی لگانا
نومبر 11, 2018
تدفین میں تاخیر کرنا
نومبر 11, 2018

میت کو قبرستان کیسے لے جائیں ؟

سوال:میت کو قبرستان لے جاتے وقت اس کا رخ کیا ہونا چاہئے؟

ھــوالــمـصــوب:

میت کا سر آگے رکھنا چاہئے:

==     محمول علی حقیقتہ…… وقد روی عنہ علیہ الصلاۃ والسلام أنہ أمر بالتلقین بعد الدفن فیقول:یافلان بن فلاں أذکر دینک …… قال فی شرح المنیۃ:إن الجمہور علی أن المراد منہ مجازہ، ثم قال: وإنما لاینھی عن التلقین بعد الدفن لأنہ لاضرر فیہ بل فیہ نفع فإن المیت یستأنس بالذکر علی ماورد فی الآثار۔ردالمحتار،ج۳،ص:۸۱

(۱)عن ابن عباس قال:مر النبی ﷺ بقبرین فقال:انہما لیعذبان وما یعذبان فی کبیر……ثم أخذ جریدۃ رطبۃ فشقہا نصفین فغرز فی کل قبر واحدۃ ،قالوا یارسول ﷲ ﷺلم فعلت ہذا؟ قال:لعلہ یخفف عنھما ما لم ییبسا۔صحیح البخاری، کتاب الجنائز باب عذاب القبر من الغیبۃ،حدیث نمبر:۱۳۷۸

قال الخطابی:ہو محمول علی أنہ دعا لہما بالتخفیف مدۃ بقاء النداوۃ لا أن فی الجریدۃ معنی یخصہ ولا ان فی الرطب معنی لیس فی الیابس وقد قیل أنہ یسبح ما دام رطبا فیحصل التخفیف ببرکۃ التسبیح……قال الطرطوسی:لأن ذلک خاص ببرکۃ یدہ وقال القاضی عیاض:لأنہ علل غرزہما علی القبر بأمر مغیب وہو قولہ ’’لیعذبان‘‘۔فتح الباری ج۱،ص:۴۱۷

ویؤخذ من ذلک ومن الحدیث ندب وضع ذلک للاتباع یقاس علیہ ما اعتید فی زماننا من وضع أغصان الآس ونحوہ وصرح بذلک أیضا جماعۃ من الشافعیۃ۔ردالمحتار ج۳،ص:۱۵۵

وفی حالۃ المشی بالجنازۃ یقدم الرأس(۱)

تحریر:محمد ظفرعالم ندوی  تصویب:ناصر علی ندوی