قرآن خوانی، تیجہ، چالیسواں

مردوں کو ایصال ثواب کا طریقہ
نومبر 11, 2018
تدفین کے بعد فاتحہ وقرآن خوانی
نومبر 11, 2018

قرآن خوانی، تیجہ، چالیسواں

سوال:ایک شخص کے انتقال پر قرآن خوانی کراتاہے، نیز گیارہویں شریف، تیجہ، چالیسواں، برسی کی شریعت کے اندرکیا حقیقت ہے؟

ھــوالــمـصــوب:

صورت مسؤلہ میں قرآن خوانی کا مروجہ طریقہ نیز مذکور چیزیں بدعت ہیں، قرآن وحدیث سے اس بات کا ثبوت نہیں ہے بلکہ ان کی ممانعت ثابت ہوتی ہے۔ حدیث شریف میں ہے:

من أحدث فی أمرنا مالیس منہ فھو رد(۳)

(۱) وفی البزازیۃ: ویکرہ اتخاذ الطعام فی الیوم الأول والثالث وبعد الأسبوع ونقل الطعام إلیٰ القبر فی المواسم واتخاذ الدعوۃ لقراء ۃ القرآن وجمع الصلحاء والقراء للختم أولقراء ۃ سورۃ الأنعام أوالإخلاص۔ ردالمحتار،ج۳،ص:۱۴۸

(۲)صحیح البخاری، کتاب الصلح، باب اذا اصطلحوا علی صلح جور فالصلح مردود، حدیث نمبر:۲۶۹۷

(۳)صحیح البخاری، کتاب الصلح، باب اذا اصطلحوا علی صلح جور فالصلح مردود، حدیث نمبر:۲۶۹۷

لہذا احتراز لازم ہے، البتہ کسی کو ایصال ثواب کا جواز ہے، لیکن رسمی طور وطریق نہ ہو، اور نہ دن تاریخ کی تعیین ہو۔

تحریر:مسعود حسن حسنی    تصویب:ناصر علی ندوی