زرد رنگ کا کفن

کفن کے کپڑے
نومبر 11, 2018
کفن سلنا
نومبر 11, 2018

زرد رنگ کا کفن

سوال:گہرے زردرنگ کا کفن میت کو پہنانا کیا اسلامی شریعت میں جائز ہے؟

(۱)المیت یقمص ویؤزر ویلف فی الثوب الثالث فإن لم یکن لہ إلا ثوب واحد کفن فیہ۔ موطأامام مالک، کتاب الجنائز، باب ما جاء فی کفن المیت،حدیث نمبر:۵۲۹، السنن الکبریٰ للبیہقی، کتاب الجنائز، باب جواز التکفین فی القمیص،حدیث نمبر:۶۹۳۷، قال البیہقی: وھذا موقوف۔

کفن الرجل سنۃ: ازار وقمیص ولفافۃ وکفایۃ: ازار ولفافۃ وضرورۃ : ما وجد ہکذا فی الکنز……وکفن المرأۃ سنۃ: درع وازار وخمار ولفافۃ وخرقۃ یربط بھاثدیاھا وکفایۃ: ازار ولفافۃ وخمار ہکذا فی الکنز۔الفتاوی الہندیہ ج۱،ص:۱۶۰

(۲) ردالمحتار،ج۳،ص:۲۴۱         (۳) فتاویٰ رحیمیہ،ج۷،ص:۱۱۲

ھــوالــمـصــوب:

کفن سفید رنگ کا شرعاً مطلوب ہے، اوریہی مسنون ہے(۱)البتہ زردرنگ کا کفن بھی اگر اسے لازم اور ضروری نہ سمجھا جائے تو جائز ہوگا۔ حضرت عمران بن حصین سے روایت ہے کہ نبی کریم ﷺ نے فرمایا:

لا أرکب الأرجوان ولا ألبس المعصفر (۲)

ولابأس فی الکفن ببرود وکتان و فی النساء بحریرومزعفر ومعصفر لجوازہ بکل مایجوز لبسہ حال الحیاۃ (۳)

(قولہ فی النساء) علی تقدیر مضاف أی وفی کفن النساء واحترز عن الرجال لانہ یکرہ لھم ذلک(۴)

تحریر: محمدطارق ندوی      تصویب:ناصر علی ندوی