طلبہ کی علمی انجمنیں

النادی العربی
عربی زبان وادب میں عملی مشق وکمال پیدا کرنے کے لیے طلبہ کی ایک انجمن ’’النادی العربی‘‘ ہے جو خطابت وانشاء نیز مطالعہ وتحقیق کی مشق کے لیے متعدد رج ذیل شعبوں پر مشتمل ہے، ان شعبوں کے جلسے ہفتہ وار اور پندرہ روزہ وقفوں سے اساتذۂ ادب عربی کی رہنمائی میں ہوتے ہیں اور مختلف شعبوں کے لحاظ سے سالانہ انعامی مقابلے بھی کرائے جاتے ہیں۔
الرائد نامی ایک معیاری اور دیدہ زیب عربی پندرہ روزہ بھی شائع ہوتا ہے، اس اخبار کے نام سے ’’النادی العربی‘‘ نے عربی مطالعہ کی معیاری اور مفید اسلوب میں لکھی ہوئی کتابوں کی ایک لائبریری کی بنیاد بھی رکھی ہے جو برابر ترقی کررہی ہے، اور ’’مکتبہ الرائد‘‘ کہلاتا ہے، اس مکتبہ کے کاموں کی انجام دہی طلبہ کے ہاتھوں میں ہوتی ہے، اور اساتذہ نگرانی کرتے ہیں، الحمدﷲ اس سے استفادہ کی طرف طلبہ کی خاص توجہ ہے۔
جمعیۃ الاصلاح
یہ طلبہ دار العلوم ندوۃالعلماء کی وہ انجمن ہے، جس سے اکثر مشہور فضلائے ندوہ دورانِ تعلیم نہ صرف متعلق رہے بلکہ انھوں نے عام ادبی و ثقافتی صلاحیتوں کو اسی کی مدد سے اجاگر کیا، اس انجمن کے صدر مہتمم صاحب دارالعلوم ہوتے ہیں، اس انجمن کے لیے طلبہ ہی میں سے ایک نائب صدر، ایک ناظم اور مقررہ تعداد میں ارکان کو صدر انجمن منتخب یا نامزد کرتے ہیں، جو انجمن کے مختلف شعبوں کی ذمہ داریاں انجام دیتے ہیں، انجمن کے ماتحت چھوٹے اور بڑے طلبہ کی دو لائبریریاں ہیں، جن میں مختلف موضوعات پر منتخب کتابوں کا اچھا خاصہ ذخیرہ موجود ہے، نیز ملک کے ممتاز دینی و ادبی رسائل واخبارات آتے ہیں، طلبہ ان سے استفادہ کرتے ہیں، پنجشنبہ کو طلبہ کے جلسے ہوتے ہیں، جن میں تقریریں ہوتی ہیں، مباحثے ہوتے ہیں، مقالات سنائے جاتے ہیں، سال کے آخر میں صحافت وخطابت کے انعامی مقابلے ہوتے ہیں، یہ انجمن مہتمم دارالعلوم کی صوابدید سے کسی استاد کی نگرانی اور تربیت میں تمام کام انجام دیتی ہے، دارالاقامہ سلیمانیہ میں بھی اس طرح کی علاحدہ انجمن قائم ہے، جس کے سارے پروگرام دارالاقامہ کے طلبہ انجام دیتے ہیں۔